پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ طاہرالقادری نے سیاست اور سیاسی سرگرمیوں سے علیحدگی اختیار کر لی ہے

ویڈیو کانفرنس کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ طاہرالقادری نے کہا کہ ہم پارلیمنٹ میں بھی رہے سب کچھ دیکھا ہے، وہاں عوامی فلاح و بہبود کے علاوہ باقی سب کچھ ہوتا ہے، ہم نے عوام میں کرپشن کے خلاف شعور بیدار کرنے میں ایک اہم کردار ادا کیا ہے۔

طاہرالقادری کا کہنا تھا کہ ہمارے ملک کی بدقسمتی ہے کہ یہاں سیاست میں غریب اور متوسط طبقے کا کوئی کردار نہیں بلکہ جاگیردار اور امیر لوگوں کے زندہ رہنے کا مقصد ہی صرف سیاست بن کر رہ گئی ہے۔

سانحہ ماڈل ٹاون پر بات کرتے ہوئے طاہرالقادری کا کہنا تھا کہ وہ بھی ہماری جاری جدوجہد کا نتیجہ تھی، تین ماہ تک اسلام آباد میں دھرنا بھی دیا جسکے نتیجے میں وہ لوگ پکڑے گئے جن پر کوئی ہاتھ بھی نہیں ڈالتا تھا۔

انہوں نے حکومت وقت سے اپیل کی کہ شہدائے ماڈل ٹاون کو انصاف کی فراہمی کا عمل یقینی بنایا جائے، وہ شہدا کے انصاف کی جنگ آخری دم تک جاری رکھیں گے۔

طاہر القادری کا کہنا تھا کہ مجھے تصنیف و تالیف کا ڈھیر سارا کام ذمے ہے جبکہ صحت کےکچھ مسائل کا بھی سامنا ہے اس لئے سیاسی سرگرمیوں میں حصہ لینے سے قاصر ہوں۔

طاہرالقادری نے سیاست اور سیاست سرگرمیوں سے ریٹائرمنٹ لیتے ہوئے اپنے تمام اختیارات پاکستان عوامی تحریک کی سپریم کونسل کے سپرد کر دئیے۔