پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق وزیراعظم عمران خان اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے لائن آف کنٹرول کا دورہ کیا، وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی، وزیر دفاع پرویزخٹک اور چیئرمین کشمیر کمیٹی بھی انکے ہمراہ تھے۔

وزیراعظم لائن آف کنٹرول پر شہریوں سے محو گفتگو

آئی ایس پی آر نے بتایاکہ وزیراعظم اور آرمی نے چیف ایل او سی پر تعینات پاک فوج کے جوانوں سے ملاقات کی۔ وزیراعظم کو لائن آف کنٹرول کی تازہ ترین صورتحال پر بریفنگ دی گئی۔ وزیراعظم نے کنٹرول لائن پر بھارتی جارحیت کا نشانہ بننے والے افراد سے بھی ملاقات کی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے ایل او سی پر تعینات پاک فوج کے جوانوں کے بلند حوصلے کی تعریف کی جبکہ انہوں نے پاک فوج کی آپریشنل تیاریوں اور بھارت کی سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی کا مؤثر جواب دینے پر پاک فوج کو سراہا۔ وزیراعظم نے ایل او سی پر شہید اور زخمی ہونے والوں کے لواحقین سے ملاقات کی اور ان کے بلند حوصلوں کو سراہا۔

وزیراعظم شہریوں کے عزم کو سراہتے ہوئے

اس موقع پر وزیراعظم نے کہا کہ بھارت کی جانب سے آزاد جموں و کشمیر کے نہتے شہریوں کو جان بوجھ کر نشانہ بنانا اور  مقبوضہ کشمیر میں طویل محاصرہ انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی بدترین مثال ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ پاکستان حق خود ارادیت دلانے کیلئے کشمیریوں کے ساتھ کھڑا ہے، انہوں نے کہا کہ ہماری توجہ فی الحال فاشسٹ بھارتی حکومت کو دنیا کے سامنے بے نقاب کرنے پر ہے جبکہ ہماری افواج کسی بھی بھارتی مہم جوئی کا منہ توڑ جواب دینے کیلئے پوری طرح تیار ہے۔