آزاد کشمیر کے صدر مسعود خان نے کہا ہے کہ سری نگر سے اٹھنے والے شعلے پورے ہندوستان کو برباد کر دیں گے، مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کا قبرستان بنے گا۔ دنیا بھر میں بھارتی اقدام کی مخالفت کی جا رہی ہے۔

وہ اسلام آباد میں مقبوضہ کشمیر سے اظہار یکجہتی کے لئے منعقدہ تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔ صدر آزاد کشمیر کا کہنا تھا کہ بھارت نے کشمیریوں سے ان کا آئین اور جھنڈا چھین لیا، کشمیر میں لوگوں کو محصور کر دیا گیا اور ہزاروں گرفتار ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ کشمیریوں سے کہا جا رہا ہے یہ وطن اب تمہارا نہیں ہے، اس آگ میں بھارت خود جل کر راکھ ہو جائے گا۔

انھوں نے کہا کہ ہندوستان کا کشمیر سے متعلق بیانیہ مسترد کر دیا گیا۔ ہندوستان پر تجارتی پابندیاں لگانے کی باتیں ہو رہی ہیں۔

وزیراعظم کی معاون خصوصی ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ کشمیر کاز کیلئے پاکستانیوں کا جذبہ قابل تحسین ہے، کشمیری بھائیوں کی جدوجہد میں ان کے شانہ بشانہ کھڑے رہیں گے، فخر ہے قوم کا مستقبل مضبوط ہاتھوں میں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ کسی بھی بین الاقوامی تنظیم اور میڈیا کو مقبوضہ کشمیر تک رسائی نہیں، مقبوضہ کشمیر دنیا کی بڑی جیل بن چکا ہے، پاکستانی عوام کشمیریوں کے ساتھ ہیں، کشمیر کی آزادی کی جدوجہد کوئی ٹونٹی ٹونٹی میچ نہیں۔۔

معاون خصوصی نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان کشمیر کے بچوں کا مقدمہ لڑنے جا رہے ہیں، وہ کشمیریوں کے وکیل، سفیر اور ترجمان بن کر ہر بین الاقوامی طاقت کا دروازہ کھٹکھٹا رہے ہیں۔