تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر رمیش کمار نے اپنی ہی حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ صحت اور تعلیم کے لئے فنڈز نہیں ہیں، بلڈ کینسر کے مریض فنڈز کی عدم دستیابی کی وجہ سے سسک رہے ہیں۔

پاکستان ہندو کونسل کے چئیرمین اور تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی رامیش کمار اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے، انہون ںے کہا کہ ہیپاٹائٹس کے مریض کو اگر دوا ہی نہ ملے تو کیا فائدہ ہوگا ایسی کفایت شعاری کا، جب کتے کے کاٹنے کی ویکسین ہی دستیاب نہیں ہے تو کیسا ہیلتھ کارڈ اور عوام کو کیا اسکے فوائد ہونگے۔

رامیش کمار نے کہا کہ صحت کارڈ کا زیادہ فائدہ نجی ہسپتالوں کو ہورہا ہے، 50فیصد مریض کو ادائیگی کرکے باقی 50فیصد اپنے پاس رکھتے ہیں اور حکومت سے بھی پیسے لے لیتے ہیں۔ ہیلتھ کارڈ میں ایسے ایسے اسپتال شامل کیے جارہے ہیں جن کا عوام کو کوئی فائدہ نہیں ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ بیوروکریسی وزیراعظم عمران خان کی نیک نیتی کے اثرات عوام تک پہنچنے نہیں دے رہی ہے۔