الیکشن کمیشن نے مریم نواز کو مسلم لیگ ن کی نائب صدارت کے عہدے سے ہٹانے کی پی ٹی آئی کی درخواست مسترد کر دی۔

الیکشن کمیشن میں پاکستان تحریک انصاف کی رکن ملیکہ بخاری، فرخ حبیب اور کنول شوزب نے مریم نواز کو مسلم لیگ ن کی نائب صدارت کے عہدے سے ہٹانے کی درخواست دائر کی تھی۔ درخواست گزاروں کا موقف تھا کہ مریم نواز چونکہ سزا یافتہ ہیں اس لئے وہ عوامی عہدے کی اہل نہیں رہیں۔

الیکشن کمیشن میں چیف الیکشن کمیشنر کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے درخواست پر سماعت اور تمام فریقین کے دلائل سننے کے بعد گزشتہ روز کیس پر فیصلہ محفوظ کیا تھا۔

چیف الیکشن کمشنر نے آج مختصر فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ نائب صدر کا عہدہ غیر فعال اور اختیارات کے بغیر ہے، اگر پارٹی صدر کا عہدہ خالی ہو تو مریم نواز نااہلی کے خاتمے تک یہ عہدہ نہیں سنبھال سکتیں لہٰذا انہیں پارٹی کی نائب صدارت سے نہیں ہٹایا جاسکتا ہے۔