احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کے ویڈیو سکینڈل میں ایک بڑی پیش رفت سامنے آئی ہے، ایف آئی اے نے گرفتار ملزمان کو الزام سے کلئیر کر دیا ہے۔ رپورٹ عدالت میں جمع کرا دی گئی ہے۔

جج ارشد ملک کیس میں ویڈیو بنانے اور اسے وائرل کرنے کے الزام میں گرفتار ملزمان ناصر جنجوعہ، خرم یوسف اور غلام جیلانی کو تفتیش کے بعد کلئیر کر دیا گیا ہے۔

فائل فوٹیج: جج ارشد ملک ناصر جنجوعہ کے دفتر میں ان سے ملاقات کر رہے ہیں

ایف آئی اے نے ملزمان سے تفتیش کے بعد رپورٹ عدالت میں جمع کرا دی ہے، رپورٹ کے مطابق ایف آئی کا موقف ہے کہ تفتیش کے مطابق گرفتار تینوں ملزمان کے خلاف شواہد نہیں ملے، عدالت چاہے تو گرفتار تینوں ملزمان کو رہا کردے۔

ایف آئی اے نے تحقیقاتی رپورٹ میں تینوں ملزمان کو ڈسچارج کردیا ہے۔

واضح رہے کہ احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کی ویڈیو بنا کر مریم نواز کو دینے اور اسے وائرل کرنے کے الزام میں ناصر جنجوعہ، خرم یوسف اور غلام جیلانی کو گرفتار کیا گیا تھا۔