جعلی بینک کاؤنٹس کیس میں اہم پیش رفت، مقدمے کا اہم ملزم ندیم الطاف وعدہ معاف گواہ بن گیا، نیب نے احتساب عدالت سے ملزم ندیم الطاف کی رہائی کے احکامات جاری کرنے کی استدعا کردی۔

جعلی بینک اکاؤنٹس کیس میں نیب نے ملزم ندیم الطاف کو جسمانی ریمانڈ مکمل ہونے کے بعد اسلام آباد کی احتساب عدالت میں پیش کیا گیا۔

جج محمد بشیر نے کیس کی سماعت کی، نیب پراسیکیوٹرنے ملزم ندیم الطاف کے وعدہ معاف گواہ بننے سے متعلق بتایا کہ ملزم ندیم الطاف کا 164 کا بیان بھی ریکارڈ کرلیا۔

نیب پراسیکیوٹر نے بتایا کہ ملزم کو چیئرمین نیب کے سامنے بھی پیش کر چکے، وعدہ معاف گواہ کی درخواست پر تمام قانونی نقاط پرعمل کرلیا۔

پراسیکیوٹر نے عدالت سے استدعا کی کہ ملزم کی رہائی کے احکامات جاری کرے جس پر عدالت نے فیصلہ محفوظ کر لیا۔

واضح رہے کہ ملزم ندیم الطاف سندھ بنک میں کریڈٹ ڈویژن کے سربراہ تھے جن پر آصف علی زرداری کے دست راست حسین لوائی کی فرنٹ کمپنیوں کو غیر قانونی قرض دینے کا الزام ہے۔