ایران کے صدر حسن روحانی نے کہا ہے کہ خلیج فارس میں غیرملکی افواج کی موجودگی سے خطہ مسائل اور عدم تحفظ کا شکار ہو سکتا ہے

وہ سالانہ ملٹری پریڈ کے موقع پر خطاب کر رہے تھے، انہوں نے کہا کہ غیرملکی افواج کی موجودگی سے خلیج فارس میں عدم تحفظ کی صورتحال ہے جو ہمارے لوگوں اور پورے خطے کے لئے مسائل کے ساتھ ساتھ عدم تحفظ کا شکار کر سکتی ہے۔

حسن روحانی کا کہنا تھا کہ ایران کسی کو بھی اپنی سرحد کی خلاف ورزی کرنے کی اجازت نہیں دے گا، ایران املک کے لئے علاقائی تعاون کا منصوبہ اقوام متحدہ میں پیش کرے گا جو خلیج فارس، آبنائے ہرمز اور بحیرہ عمان کی سلامتی سے متعلق ہے۔

انہوں نے کہا کہ خطے میں غیرملکی افواج کا موجود ہونا تیل، عالمی توانائی اور شپنگ کی سکیورٹی کے لئے بھی ایک بہت بڑا خطرہ ہے کیونکہ امریکی افواج آج تک جہاں بھی گئی ہیں وہاں بدامنی اور عدم تحفظ ہی پیدا ہوا ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ دنوں سعودی عرب کی تیل کی تنصیبات پر حملوں کے بعد سے امریکہ نے خطے میں مزید فوجیوں کی تعیناتی کا حکم دیا تھا۔ اس پر پاسداران انقالاب کے سربراہ میجر جنرل حسین سلامی نے بھی ردعمل دیا اور آج ایرانی صدر نے بھی اس حوالے سے بیان دیا ہے۔