پنجاب کے وزیر فیاض الحسن چوہان کے بیٹے کے نمبر کیسے بڑھائے گئے اس کی انکوائری رپورٹ آ گئی ہے۔

انکوائری رپورٹ میں یہ بات واضح ہو گئی ہے کہ فیاض الحسن چوہان کے بیٹے کے نمبر غیرقانونی طور پر بڑھائے گئے ہیں اور فزکس کے پریکٹیکل میں اسکے نمبر 14 سے 30 کر دئیے گئے ہیں

انکوائری رپورٹ میں بتایا گیا ہےکہ ہیڈ ایگزمینر ایسوسی ایٹ پروفیسر سلیم نے اختیارات سے تجاوز کیا اور نمبر بڑھائے، پریکٹیکل لینے والے سب ایگزامینر نے نمبروں کی تبدیلی سے اتفاق نہیں کیا جب کہ پروفیسر سلیم رمضان کے خلاف ضابطے کی کارروائی کی جائے۔

ادھر بورڈ ذرائع کا کہنا ہے کہ ہیڈ ایگزیمینر کے خلاف قانونی کاروائی کے لئے رپورٹ سیکرٹری ہائر ایجوکیشن کو بھی بھیج دی گئی ہے۔

چئیرمین راولپنڈی بورڈ ڈاکٹر غلام دستگیر کا کہنا ہے کہ فیاض چوہان کےبیٹےکا رزلٹ تاحال جاری نہیں کیا گیا، قانونی رائے کے بعد فہد حسن کانتیجہ جاری کیا جائے گا۔