آزاد کشمیر اور جہلم میں آنے والے گزشتہ روز کے زلزلے کے بعد سے آفٹرشاکس کا سلسلہ تاحال جاری ہے، زلزلے کی گہرائی کم ہونے کی وجہ سے قریبی علاقوں میں نقصانات زیادہ ہونے کا اندیشہ  ظاہر کیا جا رہا ہے۔

گزشتہ روز آنے والے زلزلے سے آزاد کشمیر کے مختلف علاقوں میں ہلاکتوں کی تعداد 37 تک پہنچ گئی ہے جبکہ ابھی تک ان علاقوں میں زلزلے کے آفٹر شاکس کا سلسلہ جاری ہے۔

زلزلے سے متاثرہ کئی علاقوں سے زمینی رابطہ منقطع ہو چکا ہے جس وجہ سے وہاں سے زخمیوں کو ہسپتال پہنچانے اور امدادی کاروائیوں میں رکاوٹوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

زلزلہ پیما مرکز کے مطابق آج صبح بھی ساڑھے 9 بجے کے قریب 3.2 کی شدت کا زلزلہ محسوس کیا گیا جس وجہ سے متاثرہ علاقوں کے لوگ ایک مرتبہ پھر باہر نکل آئے۔

آزاد کشمیر کی انتظامیہ کے مطابق اب تک 37 افراد جانبحق ہو چکے ہیں جبکہ 300 سے زائد زخمی ہیں۔ جاںبحق ہونے والوں میں دو خواتین اور ایک چھوٹی بچی بتائی جا رہی ہے۔