وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے گزشتہ روز میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ پاکستان عالمی عدالت انصاف کے فیصلوں پر عمل کرنے کا پابند ہے اور بھارتی جاسوس کلبھوشن جادھو کو 2 ستمبر کو قونصلر رسائی دی جائے گی۔

وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی میڈیا سے گفتگو کر رہے ہیں

ان کا کہنا تھا کہ جنگ آخری آپشن ہوتاہے اور کوئی باشعور ملک یا طبقہ جنگ سےگفتگو کا آغاز نہیں کرتا، ہم پرامن ملک ہیں لیکن بھارت کسی غلط فہمی میں نہ رہے، اگر جنگ مسلط کی گئی تو پاک فوج اور پاکستانی عوام تیار ہیں۔

کلبھوشن جادھو کی قونصلر رسائی سے متعلق ترجمان دفترخارجہ نے بھی تصدیق کی تھی۔ ان کا کہنا تھا کہ کلبھوشن کو ویانا کنونشن، عالمی عدالت انصاف کے فیصلے اور پاکستانی قوانین کے مطابق 2 ستمبر کو قونصلر رسائی دی جارہی ہے۔