افغان میڈیا کے مطابق وزارت داخلہ کے حکام نے بتایا کہ گزشتہ رات کابل کے رہائشی علاقے گرین ویلیج کے قریب خودکش کار بم دھماکا ہوا جس سے پاس میں موجود فیول اسٹیشن پر بھی آگ بھڑک اٹھی۔

دھماکے کے فوراََ بعد پاس موجود فیول اسٹیشن پر بھی دھماکے کی آواز سنی گئی جو وہاں موجود مسلح افراف کی فائرنگ کے نتیجے میں ہوا۔

افغان میڈیا کی اطلاعات کے مطابق دھماکے کے نتیجے میں 16 افراد جانبحق ہوئے جبکہ 100 سے زائد افراد کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔

عینی شاہدین کے مطابق دھماکہ اتنا زوردار تھا کہ عاقے میں کچھ دیر کے لئے اندھیرا چھا گیا

افغان میڈیا کے مطابق دھماکہ عین اس وقت ہوا جب افغانستان کے مرکزی ٹی وی ٹولو نیوز پر امریکہ نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد کا انٹرویو نشر ہو رہا تھا جس میں وہ طالبان سے کامیاب مذاکرات اور ان سے کئے جانے والے معاہدے کی تصدیق کر رہے تھے۔

دوسری جانب افغان طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے خودکش حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کہا کہ خودکش حملہ آور اور مسلح افراد آپس میں مسلسل رابطے میں تھے۔

فائل فوٹو: افغان شہر قندوز میں گزشتہ دنوں ہونے والا دھماکہ

واضح رہے کہ طالبان کی جانب سے یہ مسلسل تیسرا حملہ ہے اس سے قبل افغان طالبان نے شمالی افغانستان کے شہر قندوز پر حملہ کیا تھا جس کے نتیجے میں 10 افراد ہلاک ہوئے تھے جب کہ بعدازاں صوبہ بغلان کے شہر پل خمری پر حملہ کیا جس میں  7 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوئے تھے۔