جیل میں اے سی کی سہولت نہ دینے کیخلاف توہین عدالت کی درخواست سابق صدر آصف علی زرداری نے دائر کر رکھی ہے۔

احتساب عدالت کے جج راجہ جواد عباس نے درخواست پر سماعت کی۔

دوران سماعت آصف علی زرداری روسٹرم پر آ گئے اور عدالت کو بتایا کہ مجھے اس سے قبل بھی جیل میں اے سی کی سہولت دی گئی تھی جو اب میرے پاس نہیں ہے

جج کے استفسار کیا کہ کیا اس سے قبل جو آپ کو سہولت موجود تھی وہ اسی جیل میں تھی یا کسی اور جیل میں اس پر آصف علی زرداری نے عدالت کو بتایا کہ اس جیل میں بھی اور باقی جس جس جیل میں وہ رہے ہیں انہیں اے سی کی سہولت دی جاتی رہی ہے۔

آصف علی زرداری کے وکیل لطیف کھوسہ نے کہا کہ عدالتی حکم کے باوجود اے سی اور فریج کی سہولت نہیں دی جا رہی جو کہ توہین عدالت کے زمرے میں آتی ہے۔

عدالت نے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کر لیا جو بعد میں سنایا جائے گا