: میں تمہیں طلاق دیتا ھوں ۔ طلاق دیتا ھوں۔۔طلاق دیتا ہوں ۔۔۔مجھے یہ بچہ نہیں چاہئے ۔۔۔۔میں اسکو کسی قیمت پر دنیا میں نہیں لانا چاہتی ۔۔۔کیا۔۔۔۔?کیا کہا تم نے؟ ….میری بیوی میری غیر موجودگی میں کسی اور کے ساتھ؟…. تم ایک گھٹیا اور بدکردار عورت ہو۔۔۔۔وغیرہ وغیرہ وغیرہ ۔۔۔۔
یہ اور اسی طرح کے اور بہت جملے ہر روز ہماری سماعتوں سے ٹکراتے ہیں ۔۔۔۔۔خاص طور پر ھماری گھر یلو خواتین جو کہ ڈراموں کو بہت شوق سے دیکھتی ہیں۔۔۔
آج کل ہر چینل پر ڈراموں کی بہتات ہے ۔۔۔ہر چینل ریٹنگ کی دوڑ میں سبقت لے جا نے کے واسطے پورا دن لگاتار ڈراموں کو ٹیلی کاسٹ اور پھر اس کی repeat ٹیلی کاسٹ کو یقینی بناتے ہیں۔۔۔مگر اس rating کی دوڑ میں ھم نے شاید بہت کچھ نظر انداز کر دیا ہے ۔۔۔
مثلاً جیسا کہ کہا جاتا ہے کہ ڈرامے دراصل اپنے معاشرے کے ہوتے ہیں ۔۔۔معاشرے میں پنپتی روایات، عقاید، رسم ورواج،معاشی ناہمواریوں، مسائل اور چیلنجز کے آینہ دار ہوتے ہیں۔۔۔مگر حقیقت پسندی کی عینک سے دیکھا اور پرکھا جائے تو ہمارے ڈرامے کسی اور ہی ڈگر چل پڑے ہیں ۔۔۔ہمیں یہ دیکھنے کی اشد ضروت ہے کہ ہمارے ڈرامے دراصل ہمیں کیا دیکھا رہے ہیں؟ مثال کے طور پر آج کل جو ڈرامے مقبول ہیں ان میں “طلاقیں، عورت ,پر ناجائز بچے کا الزام۔۔۔۔عورت کے غیر فطری تعلقات ۔۔۔۔خاص طور پر عورت کو ساس یا بہو کے روپ بلا اور ڈاین جیسی خصلت کے ساتھ پیش کرنا۔۔۔۔اور بہت کچھ ۔۔۔۔۔کیا یھی ہمارے حقیقی مسائل ھیں، جوکہ ھمارے معاشرے کو درپیش ہیں؟ کیا یہی ھمارے، معاشرے کی اصل شکل ہے؟
اگر میں آپ کو ماضی کے جھروکوں میں لے جاوں تو بے مثال ڈراموں کی ایک طویل فہرست زہن میں دستک دیتی ہے ۔جیسا کہ خدا کی بستی، ان کہی، دھوپ کنارے، تنہاءیاںAlpha bravo وغیرہ وغیرہ ۔یہ ڈرامے نا صرف ھماری یاداشت کا حصہ ہیں بلکہ معیاری ڈراموں کا پیمانہ بھی ۔۔
ماہر نفسیات کہتے ہیں ک ڈرامے ہر فرد پر بالعموم اور خواتین پر بلخصوص اثرانداز ہوتے ہیں ۔۔۔کیونکہ وہ ان کی long term memory کا حصہ بن کاتا ھے۔۔۔۔۔
لہزا ضرورت اس امر کی ہے کہ ھم اپنے ڈراموں میں اپنے معاشرے کی تلخ حقائق کے، ساتھ ساتھ اس کے مثبت پہلوؤں کو بھی لازمی شامل کریں ۔۔۔اور نی نسل کی تربیت کو ہرگز نظرانداز نہ کریں ۔۔۔رونے دھونے، گالم گلوچ اور بہراروی کو فروغ نہ دیں۔۔یقیناََ کچھ حد تک اس پر ک ہو رہا ہے ۔۔۔مگر یہ تعداد آٹے میں نمک کے برابر ے۔۔۔۔
Naxia tanveer :tv personality, writer,researcher,documentary maker and a blogger.woked as newanchor and host for programs n shows..she draws her inspirations from her travels n life around which we fail to see…