جرمنی میں خواتین کھلاڑیوں اور صحافیوں کے لئے بین الاقوامی کانفرنس جاری

جرمنی کے شہر برلن میں ڈسکور فٹبال کے زیر اہتمام بین الاقوامی کانفرنس جاری  ۔

شازیہ نئیر( جرمنی) کانفرنس کے دوسرے روز کانفرنس کے شرکاء نے خواتین کھلاڑیوں کو درپیش مسائل پر بات کرتے ہوئے کہا کہ مردوں کے مقابلے میں خواتین کے کھیل کو میڈیا میں کم جگہ دی جاتی ہے ۔ ڈسکور فٹبال کی بین الاقوامی کانفرنس میں بات کرتے ہوئے مقررین کا کہنا تھا کہ میڈیا میں خواتین کھلاڑیوں کو جس طریقے سے دکھایا جاتا ہے وہ ایک انتہائی منفی رویہ ہے۔ خواتین کے کھیل کوکھایا جانا ذیادہ ضروری ہے نہ کہ خاتون کو دکھانا۔ کانفرنس کے شرکاء کا کہنا تھا کہ خواتین کھلاڑہوں کو ایک ماڈل بنا کر پیش کیا جاتا ہے حالانکہ انکے کھیل کو سراہنا نہایت ضروری ہوتا ہے۔ اور اسکی بنیادی وجہ یہ کہ میڈیا میں مردوں کی اجارہ داری کے باعث خواتین کے کھیلوں کو مرودوں کے مقابلے میں کم اہمیت دی جاتی ہے۔ زندگی کے دیگر معاملات کی طرح کھیل کے میدان میں بھی خواتین کو حقوق کی جنگ لڑنی پڑ رہی ہے۔ کانفرنس کے شرکاء کا کہنا تھا کہ نیوز رومز میں خواتین کی تعداد مردوں کے مقابلے میں کم  ہوتی ہے، اور بنیادی طور پر یہ کہا جاتا ہے کہ خواتین مردوں کے مقابلے میں اتنا کام نہیں کر سکتیں جتنا مرد کر سکتے ہیں۔  مرد کھلاڑیوں کے لئے تو کھیل کے میدان موجود ہیں لیکن خواتین کے لئے کھیلوں کے میدان اس طرح سے فراہم نہیں کئے جاتے۔ کھیلوں میں مرد تو فٹبال اور رگبی کھیل سکتے ہیں لیکن یہی کھیل خواتین کے لئے مناسب نہیں سمجھے جاتے۔ بلکل اسی طرح مذہبی رجحانات بھی خواتین کو کھیلوں سے دور رکھنے میں اپنا کردار ادا کرتےہیں ۔ کھیلوں میں مینیجمنٹ اور فیصلہ سازی میں خواتین کی کم تعداد بھی ایک بہت بڑا مسئلہ ہے۔ جب کھیلوں کے مقابلوں کی بات کی جاتی ہے تو خواتین کے مقابلوں کو بھی کم اہمیت دی جاتی ہے۔ کانفرنس کے شرکاء کا کہنا تھا ہ جنسی بنیادوں پر خواتین کا استحصال کیا جاتا ہے۔ کانفرنس کے موقع پر شرکاء نے اپنے ممالک میں خواتین  فٹبال کے حوالے سے درپیش آنے والے مسائل پر بھی روشنی ڈالی۔ ڈسکور فٹبال کی ایک غیر سرکاری تنظیم ہے جو کہ دنیا بھر میں خواتین فٹبالرز کو درپیش مسائل اور انکے لئے بہتر سہولیات کی فراہمی کے لئے کام کر رہی ہے۔ 

 

____________________________________________________________________________

________________________________________________________________________________

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *