شرجیل میمن کی ضمانت منسوخ،گرفتاری کاحکم،رینجرز پہنچ گئے

سندھ ہائی کورٹ نے پونے6ارب روپےکرپشن کے معاملے میں سابق وزیر اطلاعات اور پیپلزپارٹی رہنما شرجیل میمن کی ضمانت منسوخ کرتے ہوئے ان کی فوری گرفتاری کا حکم دے دیا

میگا کرپشن اسکینڈلر اور کیس میں چیف جسٹس کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے سندھ ہائی کورٹ میں ملزمان کی ضمانت کی درخواستوں پر سماعت کی

اس موقع پر عدالت نے سابق وزیر اطلاعات و نشریات سندھ شرجیل میمن  سمیت دیگر ملزمان کی ضماتیں منسوخ کرتے ہوئے انہیں فوری گرفتار کرنے کا حکم دے دیا۔ پیپلزپارٹی کے رہنما شرجیل میمن اور دیگر 12 ملزمان کے خلاف 5 ارب 77 کروڑ کی کرپشن کا کیس عدالت میں زیر سماعت ہے

آج ہونے والی سماعت میں سندھ ہائی کورٹ نے نیب حکام کو شرجیل میمن سمیت 12 ملزمان کی ضمانت منسوخ کرتے ہوئے انہیں گرفتار کرنے کا حکم دے دیا۔ شرجیل میمن کے دیگر ساتھیوں میں انعام اکبر، منصور راچپوت، سلمان منصور ، گلزار اور مسعود ہاشمی شامل ہیں، جب کہ الطاف میمن ، عمر شہزاد اور نوید بھی گرفتار ہونے والوں میں شامل ہیں۔

 

 

عدالتی حکم کے بعد وکلاء آپے سے باہر ہوگئے اور نیب حکام کو کورٹ روم سے باہر نکلا دیا۔ وکلاء کا کہنا تھا کہ آپ کورٹ روم میں نہیں بیٹھ سکتے، آپ یہاں گرفتار نہیں کرسکتے۔ جس پر نیب افسر کا کہنا تھا کہ میں صرف کارروائی دیکھنے آیا ہوں۔ نیب حکام نے عدالتی حکم کے بعد عاصم عامر اور گلزار کو گرفتار کرلیا۔

رینجرز کی بھاری نفری عدالت کے باہر موجود ہے جو نیب کی درخواست پر طلب کی گئی ہے۔ واضح رہے شرجیل میمن اور دیگر کے خلاف 5 ارب 77 کروڑ کی کرپشن کا الزام ہے

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *