آپ وزیراعظم کو ووٹ دیتے ہیں اور ایک جنبش قلم سے اسکو گھر بھیج دیا جاتا ہے نواز شریف

سابق وزیراعظم نواز شریف نے جہلم میں کارکنوں کی بڑی تعداد سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ منتخب وزیراعظم کو 5 معزز ججوں نے فارغ کیا، کیا یہ توہین عوام کو برداشت ہے، ججوں نے بھی کہا کہ نواز شریف نے کرپشن نہیں کی، آپ کو پوچھنا چاہیے جب نواز شریف نے کرپشن نہیں کی تو انہیں منصب سے کیوں نکالا۔ 

نواز شریف نے کارکنان کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ نے مجھے اسلام آباد بھیجا اور اسلام آباد والوں نے مجھے گھر بھیجا ہے،  آپ ووٹ دے کر وزیراعظم بناتے ہیں اور کوئی ڈکٹیٹر یا جج آکر آپ کے ووٹ کی پرچی پھاڑ کر ہاتھ میں دے دیتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ 70 سال سے یہی کچھ ہورہا ہے اور ہر وزیراعظم کو اوسط ڈیڑھ سال ملا لیکن آمروں نے ملک پر دس دس سال حکومت کی، کمر کے درد کا بہانہ بنا کر آمر ملک سے باہر بھاگ گیا، اس ملک میں کوئی عدالت ہے جو ایسے آمروں کو سزا دے سکے، آئین و قانون کو وہ توڑتے ہیں اور ہمارے وہ جج ایسے آمروں کو داد دیتے ہیں ۔

 

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *