ندیم ملک لائیو میں تہلکہ خیز انکشافات لاہور اور ا سلام آباد موٹروے میں 8 بلین کی کرپشن

..

 سابق ڈپٹی ڈائریکٹر ایف آئی اے انعام الرحمان سحری کے “ندیم ملک لائیو” میں تہلکہ خیز انکشافات
ایف آئی اے میں دوران ملازمت انعام الرحمان سحری کی ذمہ داری شریف فیملی کے کرپشن کیسز کی انکوائری پر لگائی گئی۔انعام الرحمان سحری کے مطابق لاہور اور اسلام آباد موٹروے میں 8 بلین کی کرپشن کی گئی.انعام سحری نے اینکر ندیم ملک کو بتایا  کہ ان کی شریف خاندان سے کوئی ذاتی دشمنی نہیں اور وہ
پاکستان کی خاطر جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہو کر تمام ثبوت فراہم کرنے کے لئیے تیار ہیں۔جو پاناما کیس انکوائری میں مددگار ثابت ہو سکتے ہیں لیکن اسکے لئیے جے آئی ٹی کو پاکستان میں ان کی ۔حفاظت کو یقینی بنانا ہو گا۔
انعام سحری نے مزید انکشاف کیا کہ ان کے پاس بینک اکاؤنٹس کی تفصیلات بھی موجود ہیں جو سلمان ضیاء اور قاضی فیملی کے نام پر استعمال ہوئے۔
جاوید کیانی نے جعلی اکاؤنٹس کھلوائےاور حسین نوازکو اکاؤنٹس مینج کرنے میں مدد کرتے رہے. جس پر ایف آئی اے نے حسین نواز کے ساتھ جاوید کیانی کو بھی ملزم نامزد کیا تھا۔ انعام سحری نے بتایا کہ جاوید کیانی نے کہا کہ مجھے اوپر والوں کا حکم ہے۔ اوپر نواز شریف اور شہباز شریف تھے۔نیلسن اور نیسکول کے علاوہ ایک اور کمپنی بھی کھولی گئ تھی جس کا نام شوڈرن تھاحدبیہ پیپر ملز کا پیسہ وہیں سے سیٹل ہوا اور التوفیق کا قرضہ بھی سیٹل کیاگیا۔1993 میں یہ ہمارے علم میں تھا کہ پارک لین کے فلیٹ شریف خاندان کی ملکیت ہیں لیکن وہ فائل بعد میں گم کردی گئ تھی۔لیکن جے آئی ٹی چاہیے تو کاغذات حاصل کئے جاسکتے ہیں ۔شریف خاندان سے اس حوالے سے تفتیش بھی ہوئی تھی جن میں شہباز شریف بھی شامل ہیں ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *