چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ کا تمام سول رویژنوں اور سول اپیلوں کو تین ماہ میں نمٹانے کا حکم

چیف جسٹس سردار محمد شمیم خان نے 30 ستمبر 2018 تک دائر تمام سول رویژنز اور سول اپیلیں کے 30 اپریل تک فیصلے کرنے کا حکم دے دیا

پنجاب بھر میں اس وقت 33 سو سے زائد سول رویژنز اور اپیلیں زیر التواء ہیں

صوبے بھر کے تمام ایڈیشنل ججز کو سول رویژنز اور سول اپیلوں کے قانون کے مطابق جلد فیصلے کرنے کا حکم

تمام اضلاع کےسیشن ججز کو اپنے متعلقہ ایڈیشنل سیشن ججز کی پندرہ روزہ کارکردگی رپورٹس بھی بھیجنے کی ہدایت