نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کے کاغذات نامزدگی میں ان کی جائیداد کا ریکارڈ منظر عام پر آگیا۔ مریم نواز پاکستان میں 15 سو 6 کنال، ایک مرلہ زرعی زمین، چوہدری شوگر ملز، حدیبیہ پیپر ملز، حدیبیہ انجینیئرنگ اور حمزہ اسپننگ ملز کی مالک ہیں۔

 

سابق نااہل وزیر اعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کے کاغذات نامزدگی میں ان کی جائیداد کا ریکارڈ منظر عام پر آگیا۔

الیکشن کمیشن میں جمع کروائے گئے کاغذات نامزدگی کے مطابق مریم نواز چوہدری شوگر ملز، حدیبیہ پیپر ملز، حدیبیہ انجینیئرنگ اور حمزہ اسپننگ ملز کی مالک ہیں۔

ریکارڈ کے مطابق مریم نواز کے محمد بخش ٹیکسٹائل ملز سمیت 5 ملوں میں شیئرہیں۔ مریم نواز پاکستان میں 15 سو 6 کنال، ایک مرلہ زرعی زمین کی مالکہ ہیں جبکہ انہوں نے خاندان کی زیر تعمیر فلور مل میں 34 لاکھ 62 ہزار کی سرمایہ کاری کر رکھی ہے۔

مریم نواز نے سافٹ انرجی پرائیویٹ لمیٹڈ کو 70 لاکھ روپے بطور قرض دے رکھا ہے، انہیں 4 کروڑ 92 لاکھ 77 لاکھ روپے کے تحائف ملے ہیں جبکہ ان کے پاس ساڑھے 17 لاکھ کے زیورات موجود ہیں۔

الیکشن کمیشن میں جمع کروائی گئی دستاویزات کے مطابق مریم نواز اپنے بھائی حسن نواز کی 2 کروڑ 89 لاکھ کی مقروض بھی ہیں۔ گزشتہ 3 برس میں مریم نواز کی زرعی زمین میں 548 کنال کا اضافہ ہوا۔

مریم نواز نے 3 برس میں 64 لاکھ روپے سے غیر ملکی دورے کیے۔ انہیں اکاؤنٹ پر2017 میں 56 ہزار 273 روپے کا منافع ملا۔

ریکارڈ کے مطابق مریم نواز نے 2017 میں 41 ہزار 961 روپے کا ٹیکس ادا کیا، 2016 میں 14 لاکھ 91 ہزار 439 روپے اور 2015 میں 2 لاکھ 46 ہزار 443 روپے ٹیکس جمع کروایا۔

مریم نوازکی 2016 میں کل آمدن 4 لاکھ 89 ہزار 911 روپے تھی جبکہ 2015 میں ان کی آمدنی 9 لاکھ 73 ہزار 243 روپے تھی۔

مریم نواز نے زرعی زمین پر 17 لاکھ 3 ہزار 590 روپے کا ٹیکس دیا جبکہ 1 لاکھ 30 ہزار روپے پارٹی فنڈ میں بھی دیے۔