نیب نے صاف پانی کیس میں ایک بار پھر سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کو طلب کرلیا ہے۔

صاف پانی اسکینڈل میں نیب نے سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کو ایک بار پھر طلب کرتے ہوئے کہا ہے کہ 5 جولائی کو نیب لاہور کے آفس میں اپنی حاضری یقینی بنائیں اور سوالات کا جواب دیں، ورنہ قانونی کارروائی کی جاسکتی ہے۔

کراچی کے مقامی ہوٹل میں بزنس پروفیشنلز اور ینگ پروفیشنلز کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے شہبازشریف نے کہا کہ گزشتہ پانچ سالوں میں بجلی کی پیداوار میں اضافہ کیا ہے، بھاشا ڈیم ہماری پہلی ترجیح ہوگی، یہ ڈیم پاکستان کے لیے ناگزیر ہے اور اس کا کوئی نعم البدل نہیں، بھاشا ڈیم کے لیے ہم نےتمام اقدامات کرلیے ہیں اور فزیبلٹی تیارہے، اب جو بھی حکومت آئے گی اسے بھاشا ڈیم بنانا ہوگا

انہوں نےکہا کہ ملک بھر میں چھوٹے ڈیم بھی بنیں گے، کالا باغ ڈیم پر بحث کرنا فضول ہے، جب تک کالاباغ ڈیم پر سب متفق نہیں ہوں گے وہ نہیں بنے گا،سابق وزیراعلیٰ کا کہنا تھاکہ کراچی میں گرین لائن کے علاوہ تین نئی سروس چلائیں گے، شہر میں سالڈ ویسٹ مینجمنٹ تباہ ہوچکی یہ مسئلہ بھی حل کریں گے