ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے پاکستان میں قید ڈاکٹر شکیل آفریدی کے بدلے عافیہ صدیقی کے پاکستان آنے کی اطلاعات سے لاعلمی کا اظہار کیا ہے

ہفتہ وار بریفنگ کے دوران ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا کہ شکیل آفریدی کے بدلے عافیہ صدیقی یا حسین حقانی کی حوالگی کی اطلاعات کا انہیں کوئی علم نہیں۔ اسلام آباد میں دو امریکی سفارتکاروں کے ٹریفک حادثات کے پیچھے کوئی خفیہ ایجنڈا نہیں۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ میں پاکستانی سفارتکاروں کی نقل و حرکت محدود کرنے کے معاملے میں فی الحال کچھ وقت کی تاخیر کی گئی ہے تاہم اس معاملے کے باضابطہ حل کیلئے بات چیت جاری ہے

ترجمان نے کہا کہ ڈاکٹر شکیل آفریدی پر امریکہ سے ڈیل کی اطلاعات کا علم نہیں۔

انہوں نے کہا کہ بھارتی فورسز نے اس ہفتے مزید چار کشمیریوں کو شہید کردیا ہے۔ بھارت مقبوضہ کشمیر میں ریاستی مظالم کا سلسلہ فوری بند کرے

ایک سوال کے جواب میں ترجمان نے کہا کہ پاکستان میں دہشتگردوں کی منظم پناہ گاہیں ختم کردی گیئں ہیں۔ پاک افغان سرحد پر مسائل ہیں جنہیں دور کرنے کیلئے افغان حکومت کو کام کرنا ہوگا۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق وزیر خارجہ کا قلمدان اس وقت وزیر اعظم کے پاس ہے۔ پاکستان اور بھارت کے درمیان ٹریک ٹو مذاکرات ہمیشہ ہوتے رہے ہیں مگر ان کو سرکاری سرپرستی حاصل نہیں ہے