سپریم کورٹ نے جعلی اکاونٹس کیس میں ٓاصف علی زرداری اور ملک ریاض سیمت دیگر کو نوٹس جاری

‬: سپریم کورٹ نے جعلی اکاونٹس کے کیس میں آصف زرداری، ملک ریاض سمیت دیگر کو نوٹس جاری کر دئیے انوار مجید ۔۔فریال تالپور کو بھی نوٹس ۔۔عدالت نے اکتیس دسمبر کوجواب طلب کر لیا عدالت کا وزیراعلی سندھ سمیت دیگر ایگزیکٹو افسران کو عدالت پیش ہونے کا حکم عدالت نے بحریہ ٹاون کی چار مختلف اومنی گروپ کی جائیدادوں کو منجمند کردیا عدالتی حکم پر پروجیکٹر عدالت میں لگا کرجوائنٹ ایکشن کمیٹی کی رپورٹ چلا کر دکھائی گئی کراچی اور لاہور بلاول ہاوس کے پیسے جعلی اکاونٹس سے ادا کئے گئے۔سربراہ جے آئی ٹی بلاول ہاوس لاہور کی اراضی زرداری گروپ کی ملکیت ہے۔سربراہ جے آئی ٹی 48 کروڑ کی اراضی خریدی گئی ۔۔سترہ کروڑ کی ادائیگی کی گئی ۔۔جے آئی آئی لگتا ہے کہ اومنی گروپ کے مالکان کا غرور ختم نہیں ہوا۔ قوم کے اربوں روپے کھاگئے اور پھر بھی بدمعاشی کررہے ہیں”-چیف جسٹس ثاقب نثار کا جے آئی ٹی رپورٹ کی سمری دکھانے کیلئے کمرہ عدالت میں بڑی سکرین لگانے کا حکم
اگر اراضی گفٹ کی گئی تو پیسوں کیوں ادا کئے گئے۔جسٹس اعجازالاحسن کیا گفٹ قبول نہیں کیا گیا تھا۔جسٹس اعجازالاحسن زرداری گروپ نے 53.4بلین کے قرضے حاصل کئے۔سربراہ جے آئی ٹی 24بلین قرضہ سندھ بینک سے لیا گیا۔سربراہ جے آئی ٹی اومنی گروپ نے اپنے گروپ کو پانچ حصوں میں تقسیک کر کے قرضے لئے۔سربرہ جے آئی ٹی اومنی گروپ سے زرداری گروپ کے ذاتی اخراجات بھی ادا کئے جاتے رہے۔سربرہ جے آئی ٹی اومنی گروپ کی شوگر ملز کے اکاونٹس سے ایک کروڑ بیس سے ایک کروڑ پچاس لاکھ روپے تک کی رقم زرداری گروپ کو ذاتی استعمال کے لئے دی جاتی رہی۔سربرہ جے آئی ٹی ان اخراجات کی تفصیلات کے مطابق کپڑوں، لنچ، کتے کےاخرجات بھی ہیں۔چیف جسٹس زرداری گروپ ،بحریہ اور اومنی گروپ کا ٹرائیکا ہے۔چیف جسٹس