کراچی : سندھ کابینہ کا اجلاس بُدھ کے روز وزیرا علٰی سید مراد علی شاہ کی زہر صدارت ہوا ،  اجلاس میں سندھ کابینہ نے ایجوکیشن سٹی ایکٹ 2013 میں ترمیم کی منظوری دیدی۔

 

تفصیلات کے مطابق  سندھ کا بینہ نے ترمیم کے تحت چیئرپرسن بورڈ آف انویسٹمنٹ ختم کرنے کی منظوری دی ۔ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن ڈپارٹمنٹ کی سیکیورٹی فیوچرڈنمبر پلیٹس پرکابینہ کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ نمبر پلیٹس پر ریٹروریفلیکٹو ورق استعمال کیا جائے گا اور مزید بتایا گیا کہ  30 جون 2020تک 6 ریجن میں 72 لاکھ 60 ہزار 605 گاڑیاں رجسٹرڈ ہوئیں۔

ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن ڈپارٹمنٹ نے بریفنگ میں مزید بتایا کہ 5 لاکھ 71 ہزار 13 موٹرسائیکلز اور 15 لاکھ 59 ہزار 432 نان کمرشل گاڑیاں شامل ہیں ۔ سندھ کابینہ نےنئےسکیورٹی فیچرز نمبرپلیٹس متعارف کرانے کی بھی منظوری دیدی۔

وزیرا علٰی سندھ مراد علی شاہ کا کہناتھا کہ نمبر پلیٹس کی قیمت کم سےکم ہونی چاہئے تاکہ کسٹمر پر زیادہ بوجھ نہ پڑے۔

کابینہ ارکان نے فیصلہ کیا کہ نئی نمبر پلیٹس نومبر تک متعارف ہونی چاہیں اور نمبر پلیٹس کی مینوفیکچرنگ کاکانٹریکٹ کرنے کی منظوری بھی دیدی گئی۔ پرائیوٹ گاڑی کی نمبرپلیٹ کا بنیادی رنگ سفیدہوگا اور سرکاری گاڑی کے نمبر پلیٹ کا بنیادی رنگ ہرا ہوگا