بین الاقوامی سیاحتی مقام دریاہ گیٹ پروجیکٹ کی بنیاد سعودی عرب میں رکھ دی گئ

ریاض؛ تاریخی شہر دریاہ جہاں سعودی ریاست وجود میں آئی وہاں پر دریاہ گیٹ ڈویلپمنٹ اتھارٹی ڈی جی ڈی اے بدھ کو دریاہ گیٹ پروجیکٹ کا سنگ بنیاد رکھ دیا۔
اس کا مقصد اس قدیم شہر کو ثقافتی ورثہ کے طور پر دنیا بھر کے سیاحوں کے لئے متعارف کروانا ہے۔ویژن 2030 کے تحت یہاں پر مختلف تاریخی مقامات کو بحال کیا جائے گا تاکہ یہاں پر ملکی اور غیر ملکی سیاح آئیں اور یہاں پر ثقافتی سرگرمیوں کے ضمن میں آتش بازی اور آرکسٹرا کا بھی اہتمام کیا جائے گا۔


یہاں پر رہائشی اور سیاح تین کلومیٹر کی پگڈنڈی سے وادی حنیفہ اور تاریخی توریف کا نظارہ کر سکیں گے۔دریاہ گیٹ پروجیکٹ سعودیہ عرب کی تاریخ کے بڑے پراجیکٹس میں شامل ہے جس کی لاگت 16 بلین ڈالر کے لگ بھگ ہے یہاں پر ہمہ وقت ایک لاکھ سیاح وزٹ کر سکیں گے۔سالانہ یہاں پر 25 سے 30 ملین سیاح آئیں گے اور یہاں پر قائم میوزیم اور گیلریز وزٹ کرسکیں گے۔یہاں پر کیلی گرافی کے مراکز، اسلامک آرٹ، نجادی اسٹائل، تھیٹر اور عرب میوزک کے لئے اکیڈمی بھی تعمیر کی جائے گئ۔
دریاہ گیٹ ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے سی ای او جیری انزیلیو نے کہا یہ پروجیکٹ دریاہ کو انٹرنیشنل ٹورسٹ مقام بنائے گا۔یہاں پر قدیم تاریخی مقامات موجود ہیں ۔ پہلے مرحلے میں 86 میں سائٹس کو دریا کے نئے میوزیم کے ساتھ لنک کردیا جائے گا۔سی ای او نے مزید کہا کہ کنگ سلیمان بن عبد العزیز آل سعود اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کے احکامات کے تحت جاری کام سے دریاہ دنیا کا سب سے بڑا تاریخی ثقافتی مقام بن کر ابھرے گا۔یہ 55 ہزار جابز پیدا کرے گا جس میں سے 15 فیصد نوکریاں دریاہ کے مقامی لوگوں کو دی جائے گئ۔سی ای او نے شہزادہ عبدالعزیز بن ترکی الفیصل کا خصوصی شکریہ ادا کیا جوکہ چیرمین سپورٹس اتھارٹی ہیں ۔22 تاریخ سے ان کے تعاون سے دریاہ میں کھیلوں کی سرگرمیوں کا آغاز ہوگا۔