اٹارنی جنرل آف پاکستان اشتر اوصاف نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔

ذرائع کے مطابق اٹارنی جنرل نے اپنا استعفیٰ صدر مملکت کو بھیج دیا ہے، فوری طور پر عہدے کی وجوہات سامنے نہیں آسکی ہیں۔

تھوڑی دیر قبل نگراں وزیراعلیٰ پنجاب نے ایڈوکیٹ جنرل پنجاب عاصمہ حامد کو عہدے سے ہٹا دیا تھا اور ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل پنجاب شان گل کو ایڈوکیٹ جنرل پنجاب کا اضافی چارج دیا تھا۔

 گورنر پنجاب رفیق رجوانہ کیجانب سے ایڈوکیٹ جنرل پنجاب عاصمہ حامد کو ان کے عہدے سے ہٹانے کا نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا، جس میں ہدایت کی گئی کہ وہ فوری طور پر اپنا عہدہ چھوڑ دیں

سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف نے حکومت ختم ہونے سے دو روز قبل عاصمہ حامد کو ایڈووکیٹ جنرل پنجاب مقرر کیا تھا جس پر اپوزیشن جماعتوں شدید احتجاج کرتے ہوئے اسے قبل از الیکشن دھاندلی قرار دیا تھا اور الیکشن کمیشن سے نوٹس لینے کا بھی مطالبہ کیا تھا۔

سیاسی جماعتوں کا موقف تھا کہ عاصمہ حامد کے خاندان کا (ن) لیگ سے قریبی تعلق ہے جس کی وجہ سے وہ الیکشن پر اثرانداز ہوسکتی ہیں،عاصمہ حامد سابق گورنر پنجاب شاہد حامد کی صاحبزادی اور سابق وفاقی وزیر قانون زاہد حامد کی بھتیجی ہی

عاصمہ حامد سے قبل ایڈووکیٹ جنرل پنجاب شکیل الرحمان خان 27مئی کو اپنے عہدے سے مستعفی ہوئے تھے جسکے بعد عاصمہ حامد کو تعینات کیا گیا تھا، ذرائع کا کہنا ہےکہ صوبائی حکومت کی جانب سے امتیاز صدیقی ایڈووکیٹ کو نیا ایڈووکیٹ جنرل مقرر کیے جانے کا امکان ہے

http://reportersdiary.com/2018/06/%D8%A7%DB%8C%DA%88%D9%88%DA%A9%DB%8C%D9%B9-%D8%AC%D9%86%D8%B1%D9%84-%D9%BE%D9%86%D8%AC%D8%A7%D8%A8-%D8%B9%D8%A7%D8%B5%D9%85%DB%81-%D8%AD%D8%A7%D9%85%D8%AF-%DA%A9%D9%88-%D8%B9%DB%81%D8%AF%DB%92-%D8%B3/