العزیزیہ ریفرنس میں نوازشریف7سال قیدکی سزاسنادی گئی سابق نوازشریف کواڈیالہ جیل منتقل
نوازشریف کوالعزیزیہ ریفرنس میں7سال قیدکی سزا،تحریری فیصلہ جاری نوازشریف العزیزیہ ریفرنس میں10سال کیلئےنااہل ہوں گے،نوازشریف کو1.5بلین روپےاور25ملین ڈالرکاجرمانہ کردیاگیا۔العزیزیہ ریفرنس میں نوازشریف کیخلاف کافی شواہدملے۔نوازشریف کی جائیدادضبط کی جائے.نوازشریف کیخلاف فلیگ شپ ریفرنس نہیں بنتابری کیاجاتاہے،،احتساب عدالت کاتحریری فیصلہ،

۔ایک ہی شخص کو چوتھی بار سزا ،مریم نوازکاٹوئٹ اندھے انتقام کی آخری ہچکی،فتح نواز شریف کی،ڈھائی سال کے طویل انتقام نما احتساب کے بعد،نسلیں کھنگالنے کےبعد،ایک پائی کی کرپشن نہ کِک بیک نہ کمیشن،نا سرکاری خزانے میں رتی بھر خیانت،مریم نواز کاٹوئٹ جتنے بھی فیصلے آئے، مرحوم والد کے ذاتی کاروبار کےحوالے سےآئے،مریم نوازکچھ غلط نہ مل سکا تو مفروضوں پر سزائیں سنائی گئیں،مریم نواز کاٹوئٹ آج کا فیصلہ نوازشریف کی امانت،صداقت اوردیانت پر ایک اورمہر ہے،مریم نواز.عدالت کے باہر فیصلےکےبعدنوازشریف کی صحافیوں سےغیررسمی گفتگو اللہ کاشکر ہےکرپشن نہیں کی،کبھی اختیارات کاغلط استعمال نہیں کیا، اس لیےضمیرمطمئن ہے۔ایون فیلڈ میں فیصلہ خلاف آنےکےبعدبھی پاکستان آیا۔عدالتوں کااحترام پہلے بھی کیاہےاوراب بھی کرونگا، سابق وزیر اعظم نوازشریف نوازشریفکوکل کوٹ لکھپت سینٹرل جیل منتقل کیاجائے،جیل سپرنٹنڈنٹ قانون کےمطابق نوازشریف کوسہولتیں فراہم کی جائیں گی،کاغذی کارروائی کےبعدہی سینٹرل جیل منتقل کیاجائےگا،جیل سپرنٹنڈنٹ